بدھ, دسمبر 12, 2012

"مالک کی رضا سے جُدا محبت جھوٹ ہے"


"جسم کی محبت کو جسم میں اور روح کی محبت کو روح میں تلاش کرو"
اللہ کی محبت کو اللہ میں اور بندوں کی محبت کو بندوں میں تلاش کرو۔ کبھی اللہ سے بندوں کی محبت نہ مانگنا - اللہ سے اللہ کے لیے محبت کرو تو وہ تمہیں بندوں سے محبت کا راستہ دکھا دے گا ، بندوں کے پاس  پہنچا دے گا۔ لیکن  اصل سچ یہی ہے کہ اگر بندوں سے محض بندوں کے لیے ہی محبت کی تو وہ تمہیں سیراب توکردیں گے لیکن راستہ بند بھی کردیں گے، منزل کھوٹی بھی کر دیں گے۔
یاد رکھو اللہ سے محبت منزل ہے اور بندوں سے محبت راستہ ہے۔ راستے پر رُکا جائے تو منزل نظر نہیں آئے گی۔
راستے پر چلتے جاؤ،اُس کی پہچان رکھو،اُس کا احترام کرو، اُس کی قدر کرو، قدم بڑھتے جائیں گے، راستے کھلتے جائیں گے۔
دسمبر 12، 2012

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

قرانِ پاک کی سورتیں

   قران پاک کی وہ سورتیں جوایک سے زیادہ ناموں سے جانی جاتی  ہیں ۔۔۔ ٭ 1)سورۂ فاتحہ(1)۔۔۔ سورۂ واجبہ۔۔اُم القران ٭2)سورۂ التوبہ(9)۔۔سور...