صفحہِ اول

منگل, جنوری 22, 2013

" آداب ِ محبت "

سورہ الاحزاب (33)۔۔ آیت 56۔ترجمہ !
"اللہ اور اُس کے فرشتے پیغمبرﷺ پر درود بھیجتے ہیں۔مومنو تم بھی اُن پر درود وسلام بھیجا کرو ۔"
محبت کا راستہ چاہتے ہو تو والدین کے بارے میں سوچو کس طرح بچے کے لیے اپنا آج اورکل گروی رکھ دیتے ہیں،جس کی کوئی گارنٹی نہیں کہ کل وہ اُن کے لیے کچھ کر بھی سکے گا یا نہیں ۔
عاشق بننا چاہتے ہو یا عاشقی کےاصول سیکھنا چاہو تو کسی کو یا اپنے آپ ہی کو چھوٹے بچوں سے بات کرتے ہوئے یا ان سے پیار کرتے ہوئے ان کا خیال رکھتے ہوئے دیکھ لو،جان جاؤ گے کہ کس طرح ہم بغیر جھنجھلائے ان کی ہر ہاں میں ہاں ملائے جاتے ہیں ۔
محبوب بننا چاہتے ہوتو اللہ کو دیکھ لوکہ وہ کس طرح اپنی خوشبواپنی نعمتیں سارے جہاں پر نچھاور کر رہا ہے اور بے نیاز ہے جس نے جاننا ہے وہ جان کر آئے جس نے ماننا ہے وہ مان کر آئے محض دیکھا دیکھی کسی جبر یا خوف کے زیرِاثر اپنا آپ اُس کے حوالے نہ کرے ۔
محبت کرنا چاہتے ہو اور محبت کے جواب کی بھی چاہ ہے اورمحبوب سے اس جواب کی طلب بھی ہے تواللہ اور اس کے نبی ﷺ کی محبت کو دیکھ لو۔ کوئی 'میں' نہیں ،کوئی بڑائی چھوٹائی نہیں، اللہ خالق ہے لیکن پھر بھی اپنی تخلیق سے محبت کا ثبوت پیش کرتا ہےمحبت کا ایک انداز یہاں سے بھی سیکھ لو کہ محبت شراکت کا نام بھی ہے اور وحدت بھی کہ اللہ اپنی محبت میں فرشتوں اور انسانوں کو بھی دعوتِ عام دیتا ہے کہ میں اپنے پیارے بندے پر درود بھیجتا ہوں تو تم بھی اس میں شریک ہو جاؤ اور یکجائی کا یہ عالم ہے کہ جب بلاتا ہے تو کسی کی پرواہ نہیں کسی کی مداخلت نہیں،"بس میں اورتو"محبوب کے مُحب کودیکھنا چاہو اپنے نبیﷺ کو دیکھ لو جومحبت میں یوں گم ہے کہ اپنی حیثیت کا احساس بھی ہے اورمحبوب کی ناراضگی کا لحاظ بھی،آنسوؤں کا خراج بھی ہے لیکن راضی برضا بھی اگرمحبوب نے اس قابل جانا ہے تو جواس کی رضا، بلاوہ آیا تو یوں چل دیئےکہ کوئی تکرار نہیں کوئی جھجھک نہیں ۔

2 تبصرے :

  1. Farooq HayatMay 27, 2014+
    Spirituality.... Faith.... Devine Submission of Prophet PBUH.....Indeed this all revolves around sublime faith which is hard to expressed in words.
    Thanks to your beautiful pensive skills & eloquence which made it possible for us to read and digest its very essence.

    جواب دیںحذف کریں