جمعہ, فروری 27, 2015

"انتسابِ کُتب ۔۔۔ مستنصرحسین تارڑ"

مستنصر حسین تارڑ کی تمام کتابوں کا تعارف
جناب مستنصرحسین تارڑ کی 78 کتابیں شائع ہو چکی ہیں  اُن میں سے 56کتب اور اُن کے انتساب  درج ذیل ہیں ۔۔۔۔۔
٭1)نکلے تری تلاش میں(1971)۔
۔۔۔نیم لفٹین مبشر کے نام
٭2)اندلس میں اجنبی(1976)۔
۔۔۔کیپٹن پائلٹ ساجد نذیر  شہید کے نام


٭3)خانہ بدوش(1983)۔
۔۔۔۔اباجی کے لیے جو میری پہچان ہیں
(چوہدری رحمت خان تارڑ)
٭4)ہنزہ داستان(1985)۔
۔۔۔۔امی جان کے لیے
٭5)کےٹو کہانی(1994)۔
۔۔۔امی جی ابا جی
آپ کے جانے کے بعد
میری کمر پر کوئی تھپکی نہیں دیتا۔
مجھے کوئی بےوجہ دعائیں نہیں دیتا۔

٭6)پیار کا پہلا شہر(1975)۔
۔۔۔ میمونہ کے نام

٭7)پرندے(1984)۔
۔۔۔۔سلجوق،سُمیر اور قرۃ العین مستنصر کے نام

٭8)چک چک(2003)۔
۔۔۔سلجوق کے نام
٭9)راکھ( ایوارڈیافتہ1997)۔
۔۔۔سُمیر تارڑ کے نام
٭10)دیوسائی(2003)۔
۔۔۔لاڈو بیٹی عینی کے نام
٭11)برفیلی بلندیاں(2001)۔
۔۔۔سلجوق اور رابعہ کے نام

٭12)پُتلی پیکنگ کی(2009)۔
۔۔۔عینی اور بلال کے نا م
٭13)سُنہری اُلو کا شہر(2005)۔

۔۔اپنےنواسےنوفل اور پوتی مشال کے نام
٭14)مورت(1990)۔
۔۔۔زبیرحسین  تارڑ  کے لیے
جو میرے لیے اب بھی
: چھوٹا  ببو ہے
٭15)گزارا نہیں ہوتا(1987)۔
۔۔۔برادرِعزیز نیاز احمد کے لیے
٭16)جپسی(1987)۔
۔۔۔۔۔اعجاز احمد کے نام
٭17)چترال داستان(2004)۔

۔۔۔اعجاز احمد کے لیے

٭18)شمشال بےمثال(2002)۔
۔۔۔ پیارے افضال احمد کے نام
٭19)اےغزالِ شب(2010)۔
۔۔۔نیاز احمد کے نام


٭20)ہزاروں ہیں شکوے(1998)۔
۔۔۔شفیق الرحمٰن کے نام
٭21)یاک سرائے(1997)۔
۔۔۔احمد داؤد کے نام
٭22)سفر شمال کے(1991)۔
۔۔۔پسّو کے ماسڑ حقیقت کے نام
٭23)سنو لیک(2000)۔

۔۔۔تلمیذ حقانی کے نام
٭24)الاسکا ہائی وے(2011)۔
۔۔۔ چنار کے ایک خزاں رسیدہ پتے کے نام۔۔
کُونج کے نام جو میری سفری رفیق تھی۔۔
اور
 یار ِبےمثال تلمیذحقانی کے نام
٭25)نیپال نگری(1999)۔
۔۔۔گندھارا کے مہاتمابدھ کے نام

٭26)تارڑ نامہ 2۔۔ 
۔۔۔محمد خالد اختر کے نام
٭27)تارڑنامہ 3۔۔۔

۔۔۔کرنل محمد خاں کے نام 
٭28)الو ہمارے بھائی  ہیں(2007)۔

۔۔۔ دنیا بھر کے الوؤں کے نام
٭29)کالاش (وادی کافرستان کا ڈرامائی سفرنامہ) ۔
۔۔۔کل شب دلِ آوارہ کو سینے سے نکالا
  یہ آخری کافر بھی مدینے سے نکالا
      (اقبال ساجد)      
٭30)شہپر
۔۔۔پاکستان ائیرفورس کے نام
٭31)فاختہ1974۔

٭32)پکھیرو۔(1976)۔









٭33)نانگا پربت(1991)۔


٭34)بہاؤ1990۔

٭35)دیس ہوئے پردیس1994۔
٭36)رتی گلی2005۔

٭37)منہ ول کعبہ شریف(2006)۔










٭38)غارِحرا میں ایک رات(2006)۔

٭39)قلعہ جنگی2008۔














٭40)قربتِ مرگ میں محبت(2008)۔

٭41)ماسکو کی سفید راتیں(2009)۔


٭42)خس وخاشاک زمانے(2010)۔

٭43)ہیلو ہالینڈ2011۔


٭44) ڈاکیا اور جولاہا2012   ۔


٭45)لاہور سے یارقند تک2014۔ 




٭46)امریکہ کے سو رنگ(اگست2015)۔

٭47)آسٹریلیا آوارگی(اگست 2015)۔

٭48)راکاپوشی نگر(اگست2015   )۔

٭49)اور سندھ بہتا رہا2016۔

٭50)لاہورآوارگی(2017)۔


٭51)۔حراموش ناقابلَ فراموش۔2017۔
٭52)پیار کا پہلا پنجاب(جنوری 2017)۔
٭53)منطِق الطیر،جدید(اکتوبر 2018)۔


۔۔۔۔۔۔۔۔

٭54)صنم کدہ کمبوڈیا 
سفر  2018
اشاعت مارچ 2020
٭55)ویت نام تیرےنام
سفر۔۔ جون2018 
اشاعت۔۔مارچ 2020
 

٭56)تارڑ نامہ(7)۔ اگست 2020

٭57)جوکالیاں  (جوکالیاں ۔ ٹلہ جوگیاں۔ سٹوپوں کا شہر سوات، پنجاب کا واٹرلُو چیلیانوالہ اور جوکالیاں)۔
اشاعت دسمبر 2020
۔۔۔۔۔۔
 ٭58) کیوبا کہانی(دبئی،امریکہ،میکسیکو اور کیوبا کے سفر)
سفر2019
اشاعت اگست 2021
۔۔۔۔۔

2 تبصرے:

  1. منظر ہے اس طرح کا کہ دیکھا نہیں ہوا
    مستنصر حسین تارڑ
    31.10.2015
    https://www.facebook.com/groups/mht.official/permalink/1100821319928612/

    جواب دیںحذف کریں

  2. منظر ہے اس طرح کا کہ دیکھا نہیں ہوا
    مستنصر حسین تارڑ
    27.10.2015
    https://www.facebook.com/groups/mht.official/permalink/1099019406775470/

    جواب دیںحذف کریں

"آدم ،اولادِ آدم اورجنت کہانی"

یکم محرم الحرام بمطابق 1444 ہجری 31 جولائی 2022 بروز اتوار " جنت سے نکلنے میں یا تو غلطی ہوتی ہے یا پھر جنت نہیں" ۔ جن...