صفحہِ اول

اتوار, مئی 26, 2013

"پُکار"

اے میرے خدا! اے میرے پروردگار ! دُنیا کی ہر شے کا ایک وقت تو نے مقرر کر رکھا ہے۔ ہر چیز رفتہ رفتہ فنا ہو جاتی ہے ۔ میرے خدا میں تیرے کاموں میں مداخلت نہیں کر رہی  صرف اپنے دل کا حال کہہ رہی ہوں مجھے معلوم ہے تو دلوں کا حال خوب جانتا ہے پھر بھی انسان ہوں نا کمزور سی ہستی ۔ میرے اللہ میں نے زندگی کو اتنا پہن لیا ہے کہ اب یہ بوسیدہ بلکہ چیتھڑے چیتھڑے ہو گئی ہے ۔ اسے میں نے ہر انداز میں برت لیا ہے۔ میرے دل میں زندگی کی کسی شے کے لیے کوئی جگہ نہیں  شاید زندگی کو بھی میری اب کوئی ضرورت نہیں ۔ میں واپس آنا چاہتی ہوں حالانکہ واپسی کا سوچ کر ہی دل لرز اُٹھتا ہے  کہ زاد ِراہ تو کوئی ہے نہیں لیکن اب اس کے سوا کوئی راستہ نہیں دکھائی  دے رہا ۔ میرے خدا مجھے واپس بُلا لے۔ میرے گناہوں کو معاف کر،واپسی کے سفر کو آسان بنا دے ،میں توبہ کرتی ہوں ،میری توبہ قبول فرما- موت کی سختی سے بچا لے۔میرے خدا زندگی کی مہلت دینی ہے تو میں التجا کرتی ہوں مجھے حج ِبیت اللہ  کی سعادت  نصیب فرما ۔ زندگی سے صرف دیدارِخانۂ کعبہ مانگتی ہوں اور مجھے کچھ نہیں چاہیے۔
مجھے ذہنی سکون دے دے۔مجھے زندگی گزارنے کا ہنرعطا فرما-مجھےعبادت کا سلیقہ بخش دے۔میرے مالک مجھے میرے پیاروں سے پہلے واپس بلا لے۔میری دُعاؤں کو قبول فرما۔
آمین یا رب العالمین ۔

کوئی تبصرے نہیں :

ایک تبصرہ شائع کریں