سوموار, نومبر 11, 2013

"اُمتِ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم"

   "اُمتِ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم"
نبی کریم ﷺ کی اُمت دوسری تمام اُمتوں سے افضل ہے۔ سب سے 
افضل اُمتی وہ ہیں ۔۔۔۔۔ 
 جنہوں نے حضورﷺ کو دیکھا اورآپﷺ پرایمان لائے ،آپﷺ کی تصدیق کی ،آپﷺ سے بیعت کی ۔ آپﷺ کے ساتھ کُفار سے لڑے،آپﷺ کی عزت کی ،مدد کی ، اپنی جان اپنا مال آپﷺ کے لیے (راہ ِحق) میں صرف کردیا۔
ان سے بہتر 1400 ۔۔۔۔۔۔
 اس زمانہ کے لوگوں میں زیادہ افضل وہ ہیں جنہوں نے حُدیبیہ میں حضورﷺ کے دستِ مبارک پر بیعت کی جسے
بیعتِ رضوان کہتے ہیں۔ یہ چودہ سو افراد تھے۔
ان سے بہتر 313۔۔۔۔۔۔۔
اہلِ حُدیبیہ سے بہتر اصحاب ِبدر ہیں جن کی تعداد 313 تھی اور اصحاب ِطالوت کے برابر ہیں۔
ان سے بہتر 40 ۔۔۔۔۔۔۔
ان سے بہتردارِخیزران کے چالیس مرد ہیں جو حضرت عمررضی اللہ عنہ کے ساتھ اسلام لائے تھے۔
ان سے بہتر دس ۔۔۔۔۔۔۔
 ان سے افضل دس وہ ہیں جن کے بارے میں نبی کریمﷺ نے گواہی دی کہ یہ قطعی بہشتی ہیں۔ ان میں
حضرت ابوبکرصدیق رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔ 
حضرت عمررضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔ 
حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔
حضرت علی رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔ 
حضرت طلحہ رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔
حضرت زبیر رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔
حضرت عبدالرحمٰن بن عوف رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔
حضرت سعد رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔
حضرت سعید رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔
حضرت ابوعبیدہ بن جراح رضی اللہ عنہ ۔۔۔۔۔۔
ان سے بہتر چار ۔۔۔۔۔
چاروں خلفاء راشدین سب سے زیادہ نیکو کار اور افضل ہیں۔ مراتب کے لحاظ سے سب سے پہلے 
حضرت ابوبکرصدیق رضی اللہ عنہ
پھر حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ
پھر حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ
اور پھر حضرت علی رضی اللہ عنہ آتے ہیں۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

" اعجازِآیاتِ قرانی"

٭قرآن مجید کی  سورہ الحجر(15) کی آیت (9)  میں اللہ نے حفاظت قرآن کا وعدہ لیا ہے۔ آیت ترجمہ۔"ہم نے یہ نصیحت اُتاری ہے اور ہم ہی اس کے...