بدھ, اگست 30, 2017

"اعجازِسورۃ قرانی"

سورہ الزمر(40)۔آیت27۔ترجمہ۔"اور ہم نے لوگوں کے لیے اس قرآن میں ہر قسم کی مثال بیان کر دی ہے تاکہ وہ نصیحت پکڑیں"۔
تلاوتِ قران پاک کے لیے قران پاک کی آیات کو سورتوں ، پاروں اورمنازل  میں تقسیم کیا گیا ہے۔
"منازلِ قران پاک" 
٭قرآن کریم کی پہلی منزل سورۂ الفاتحہ(1) سے سورۂ النساء (4)تک ہے۔ جس میں  چار سورتیں، پچاسی(85) رکوع اور چھ سو انہتر(669) آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی دوسری منزل سورۂ المائدہ (5)سے سورۂ التوبہ  (9)تک ہے جس  میں پانچ سورتیں، چھیاسی(86) رکوع اور چھ سو پچانوے (695)آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی تیسری منزل  سورۂ یونس (10)سے سورۂ النحل(16) تک ہے جس میں سات سورتیں، اڑسٹھ(68) رکوع اور چھ سو پینسٹھ (665)آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی چوتھی منزل  سورۂ بنی اسرائیل(17) سے سورۂ فرقان (25)تک ہے جس میں نو سورتیں، چھہتر (76)کوع اور نو سو تین(903) آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی پانچویں منزل  سورۂ الشعراء (26)سے سورۂ یٰس(36)  تک ہے جس میں گیارہ سورتیں، بہتر رکوع(72) اور آٹھ سو چھپن(856) آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی چھٹی منزل سورۂ  الصّٰفٰت (37)سے سورۂ الحجرات(49) تک ہے جس  میں  تیرہ سورتیں، انہتر (69)رکوع اور اور آٹھ سو ستاسی (887)آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی ساتویں منزل  سورۂ ق (50) سے سورۂ الناس (114)تک ہے جس میں پینسٹھ(65) سورتیں، ایک سو دو رکوع(102) اور ایک ہزار پانچ سو اکسٹھ (1561)آیات ہیں
۔۔۔۔
٭قرآن کریم کا سب سے بڑا پارہ تیسواں پارہ ہے جس میں سینتیس سورتیں (37)، انتالیس رکوع(39) اور پانچ سو چونسٹھ (564)آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کا سب سے چھوٹا پارہ چھٹا پارہ ہے جس میں ایک سو گیارہ(111) آیات ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی سب سے بڑی سورة البقرہ(2) ہے جس کی دو سو چھیاسی(286) آیات  اور چالیس(40) رکوع ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی سب سے چھوٹی سورہ سورة الکوثر(108) ہے جس کی تین آیات ہیں۔
۔۔۔
٭سورة الاخلاص(112) تہائی قرآن ہے جبکہ سورة الکافرون(109) اور سورة زلزال(99) چوتھائی قرآن ہے۔(ترمذی)۔
۔۔۔
٭قران پاک میں موجود 114سورتوں کو تنزیل کے اعتبار سے مکی اور مدنی میں تقسیم کیا گیا ہے۔سورتوں میں 35 سورتیں ایسی ہیں جن کے متعلق کہا جاتا ہے کہ وہ دوبار نازل ہوئیں ہیں ایک بار مکہ میں اور ایک بار مدینہ میں جیسے سورہ رحمن، سورہ رعد، سورہ زلزال وغیرہ۔
۔۔۔۔۔۔
٭قرآن کریم کے دوسرے پارے  (سَيَقُولُ السُّفَہاء) اور پانچویں پارے (والمحصنٰت)  میں نہ کسی سورت کی ابتداء ہے اور نہ ہی انتہا۔
۔۔۔
٭قرآن پاک کی  3سورتوں میں تین تین آیات ہیں ۔
سورہ العصر(103)۔
سورہ الکوثر(108)۔
سورہ النصر(110)۔
۔۔۔
٭قران پاک میں دو ایسی سورۂ ہیں جو تین پاروں میں شامل ہیں۔
٭1) سورۂ بقرۂ(2)۔۔۔۔ جو پہلے پارے سے شروع ہوتی ہے اور تیسرے پارے میں اختتام پذیر ہوتی ہے۔
٭2)سورۂ النساء(4)۔۔۔جو پارہ چار سے شروع ہوتی ہے اور پارہ  چھ  میں اختتام پذیر ہوتی ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کے آٹھ پارے ایک نئی سورہ سے شروع ہوتے ہیں۔
٭1)پارہ 1۔۔۔سورۂ الفاتحہ۔سورۂ البقرہ
٭2) پارہ 15۔۔سورۂ بنی اسرائیل(17)۔
٭3)پارہ17۔۔۔سورۂ الانبیاء(21)۔
٭4) پارۂ 18۔۔ سورۂ المومنون (23)۔
٭5)پارہ26۔۔سورۂ الاحقاف(46)۔
٭6)پارہ28۔سورۂ المجادلہ(58)۔
٭7)پارہ 29۔۔سورۂ الملک(67)۔
٭8) پارہ 30۔سورۂ النبا(78)۔
۔۔۔
٭ سورہ النمل(27) کے دو رکوع ہیں۔ایک رکوع مکہ معظمہ میں اور دوسرا رکوع دس سال بعد مدینہ منورہ میں نازل ہوا۔
۔۔۔
٭ سورۂ النمل (27) میں ’’بسم اللہ الرحمن الرحیم‘‘دو مرتبہ آئی ہے۔ ایک بار ابتدا میں دوسری بار آیت (30)۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی  سورۂ مبارکہ سورة القمر (54)،سورة الرحمن(55) اورسورة الواقعہ(56)  میں لفظ اللہ نہیں۔
۔۔۔
٭ سورۂ توبہ (9) وہ واحد قرانی سورہ ہے جو بسم اللہ الرحمٰن الرحیم کے بغیر شروع ہوتی ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں سب سے طویل نام والی سورت سورۂ بنی اسرائیل(17) ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی پانچ سورتوں سورة طہٰ (20) ،سورة یٰسین(36) ،سورۂ ص (38)، سورة ق  (50) اور سورۂ القلم (68) کے نام  ان سورتوں کے پہلے لفظ  ہیں۔
۔۔۔
٭سورہ الفاتحہ کی سات آیات ہیں اور ان میں "ف" نہیں ہے۔
۔۔۔
٭ سورۃ الکوثر کی تین آیات ہیں اور ان میں "م" نہیں ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی بارہ سورتیں ہیں جن کے نام میں کوئی نقطہ نہیں آتا۔
٭1)سورۂ المائدہ(5)۔
۔ 2)سورۂ ہود(11)۔
۔3)سورۂ الرعد(13)۔
۔4) سورۂ طٰہ(20)، ۔
۔5)سورۂ روم(30)۔
۔ 6)سورۂ ص(38)۔
۔ 7)سورۂ محمد(47)۔
۔8)سورۂ طور(52)۔
۔9)سورۂ ملک(67)۔
۔ 10)سورۂ دہر(76)۔
َ۔11)سورۂ الاعلی(87)، اور12)سورۂ عصر(103)۔
۔۔۔۔۔۔
٭قرآن کریم کی سورۂ التین (95)  کا آغاز دو پھلوں انجیر اور زیتون کے نام سے ہوا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی  سورۂ الاعلی(87)  کا اختتام دو نبیوں  حضرت ابراہیم علیہ السلام اور حضرت موسی  علیہ السلام کے نام پر ہوتا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی پانچ سورتوں کا آغاز الحمد سے ہوتا ہے۔
سورۂ الفاتحہ(1)،سورۂ الانعام(6)،سورۂ الکہف (18)،سورۂسبا(34)،سورۂ فاطر(35)۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی پانچ سورۂ مبارکہ   کا آغاز قل سے ہوتا ہے۔
سورة الجن(72)،سورة الکافرون (109)،سورة االاخلاص(112)،سورة الفلق(113)،سورة الناس (109)۔
۔۔۔
٭قرآن مجید کی اُنتیس(29)سورتوں کا آغاز حروف مقطعات سے ہوتا ہے۔
 تمام سورۂ مبارکہ میں حروف  مقطعات  پہلی آیت کے طور پر ہیں۔صرف سورۃ الشوریٰ میں پہلی آیت میں  حٰمٓ اور دوسری آیت میں عٓسٓقٓ ملتا ہے۔
٭1)سورۂ البقرۂ(2) ۔الٓـمٓ۔
۔2) سورۂ  آل عمران(3) ۔الٓـمٓ ۔
۔3)سورہ  الاعراف(7)۔الٓـمٓـصٓ۔ 
۔4) سورۂیونس(10 )۔"الٓـرٰ۔
۔ 5) سورہ ہود (11) ۔"الٓـرٰ۔
۔6)سورہ  یوسف(12)۔"الٓـرٰ۔
۔7)سورۂ الرعد (13)۔الٓـمٓـرٰ ۚ۔
۔ 8)سورہ ابراہیم (14)۔الٓـرٰ۔
۔ 9) سورۂ  الحجر (15)۔ الٓـرٰ۔
۔ 10) سورۂ طہٰ (20)۔ ٰطهٰ۔
۔11)سورہ  مریم (25)۔ كٓـهٰـيٰـعٓـصٓ ۔
 ۔12)سورہ الشعراء (26)۔ٰطسٓمٓ  ۔
 ۔13) سورۂ النمل (27)۔ٰطـسٓ ۚ۔
۔ 14) سورۂ القصص(28)۔ ٰطسٓمٓ۔
۔15)سورہ العنکبوت(29)۔ الٓـمٓ۔
۔16)سورۂ الروم (30)۔ الٓـمٓ۔
۔17) سورۂ  لقمان (31)۔  الٓـمٓ ۔
۔ 18) سورۂ السجدہ (32)۔  الٓـمٓ ۔
۔19)سورۂ  یٰس(36)۔يٰـسٓ  ۔
۔20)سورۂ ص (38)۔صٓ۔
۔21)سورۂ غافر(40)۔حٰمٓ۔
۔22)سورۂ فصلت(41)۔حٰمٓ۔
۔ 23) سورۂ الشورٰی (42)۔حٰمٓ۔عٓسٓقٓ (2)۔
۔ 24) سورۂ الزخرف(43)۔حٰمٓ ۔
۔25)سورۂ  الدخان(44)۔حٰمٓ۔
۔26) سورۂ الجاثیہ (45)۔حٰمٓ۔
۔27) سورۂ  الاحقاف(46)۔حٰمٓ۔
۔28)سورۂ ق(50)۔ قٓ ۚ۔
۔29)سورۂ  القلم (68)۔نٓ ۚ۔
۔۔۔
٭چھ سورۂ مبارکہ  سورة البقرة (2)،سورة آل عمران(3) سورة العنکبوت(29)،سورة الروم(30)،سورة لقمان(31) اور سورة السجدہ(32)"الٓــمٓ" سے شروع ہوتی ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں دو سورتوں سورة الشعراء (26)اورسورة القصص(28) کا آغاز "طسٓمٓ  "سے ہوتا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی حوامیم(یعنی جن سورتوں کا آغاز "حٰمٓ"سے ہوتا ہے) وہ سات ہیں۔
سورة غافر(40)،سورة فصلت(41)،سورة الشوریٰ(42)،سورة زخرف(43)،سورة الدخان(44)،سورة الجاثیہ (45)سورة الاحقاف(46) ۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی پانچ سورۂ مبارکہ سورة یونس(10)سورة ہود(11)سورة یوسف(12)سورة ابراہیم(14) اورسورۂ الحجر (15)    کا آغاز"الٓـرٰ"سے ہوتا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی  چار سورتیں سورة الحدید(57)،سورة الحشر(59)اورسورة الصف(61) سورۂ الاعلیٰ (87)  "  سَبَّحَ "سے شروع ہوتی ہیں۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں دو سورتوں  سورة الجمعہ(62) اور سورة التغابن(64) کا آغاز " يُسَبِّـحُ" سے ہوتا ہے۔
۔۔۔
٭دو سورتوںسورة الفرقان(25) اورسورة الملک(67) کی ابتدا "تَبَارَكَ الَّـذِىْ" سے ہوتی ہے۔
۔۔۔
٭چار سورتوں سورة الفتح(48)،سورة نوح(71)،سورة القدر(97) اور سورة الکوثر(108)  کی ابتداء "اِنَّا" سے ہوتی ہے۔
۔۔۔
٭دو سورتیں  سورة المطفیفین(83)، سورة الھمزہ(104) کا آغاز" وَيْلٌ" سے ہوتا ہے۔
۔۔۔
٭ سات سورتیں سورۂ واقعہ56،سورۂ المنافقون63،سورۂ التکویر81،سورۂ انفطار82 ، سورۂ انشقاق84،سورۂ نصر110اور سورۂ زلزال99  ۔۔  ” اِذَا 'سے شروع ہوتی ہیں۔
۔۔۔
٭ بیس سورۂ مبارکہ  "قسم" ،"و" سے شروع ہوتی ہیں۔
سورۂ الصافات 37۔۔۔سورۂ ص 38۔۔۔سورۂ ق 50۔۔۔سورۂ الذاریات 51۔۔۔سورۂ طور 52۔۔۔سورۂ النجم 53۔۔۔سورۂ ن 68۔۔۔سورۂ القیامت 75۔۔۔ سورۂ المرسلات 77۔۔۔سورۂ النازعات79۔۔۔سورۂ البروج 85۔۔۔سورۂ الطارق86۔۔۔۔سورۂ الفجر 89۔۔۔سورۂ البلد90۔۔۔۔سورۂ الشمس 91۔۔۔سورۂ اللیل 92۔۔۔سورۂ الضحیٰ 93۔۔۔سورۂ التین 95۔۔۔سورۂ العادیات 100۔۔۔سورۂ العصر 103 ۔۔۔۔
۔۔۔
٭ فرشتوں کی صفات کے نام پر  تین سورتیں  ہیں ۔
۔1)سورہ الصافات (37)ـ 2)سورۂ المعارج(70) ـ3)سورہ المرسلات (77)،4)سورہ النازعات (79)ـ،بعض نے اس سے مراد فرشتوں کو لیا ہے ـ
۔۔۔
٭ قیامت کے نام پر یا قیامت کی خوفناکیوں کے نام پر تیرہ سورتیں آئی ہیں ـ
۔1) سورہ الدخان 44۔۔ 2)سورہ الواقعہ56 ـ۔ 3)سورہ الحشر59۔۔ 4)سورہ التغابن64۔۔ 5)سورہ الحاقہ 69۔۔ 6)سورہ قیامہ75۔۔ 7)سورہ النبا78۔۔ 8)سورہ التکویر 81ـ 9)سورہ النفطار82۔۔ 10)سورہ الانشقاق84۔۔ 13)سورہ غاشیہ 88۔۔12)سورہ الزلزال 99۔۔13)سورہ القارعہ 101ـ
۔۔۔
٭ازمان و اوقات کے نام پر آٹھ سورتیں ہیں۔
۔(1) سورہ الحج،(2) سورہ جمعہ،(3)سورہ الفجر،(4) سورہ الیل ،(5)سورہ الضحٰی، (6) سورہ القدر، (7) سورہ العصر،(8) سورہ الفلق۔
۔۔۔
٭ مقامات کے نام پر سات سورتیں ہیں۔
۔(1)سورہ اعراف 7۔
۔(2) سورہ الحجر 15۔
۔(3)سورہ الاحقاف46۔
۔(4) سورہ طور52۔
۔(5) سورہ البلد90۔
۔(6) سورہ الککوثر108۔
۔(7) سورہ التین95۔
۔۔۔۔
قرانی سورہ مبارکہ جوایک سے زیادہ ناموں سے جانی جاتی  ہیں"۔"
٭ 1)سورۂ فاتحہ(1)۔۔۔السبع المثانی (سورہ الحجر14،آیت 87)۔۔ سورۂ واجبہ۔۔اُم القران۔۔اُم الکتاب۔۔الدعا۔۔الشفا۔۔الصلوٰۃ۔۔الحمد۔۔الاساس۔۔الکنز۔۔ الشافیہ۔۔الکافیہ۔۔الوافیہ۔۔الرٰقیہ۔
٭2)سورۂ التوبہ(9)۔۔سورۂ البراءَۃ۔
٭3)سورۂ بنی اسرائیل(17) ۔۔۔۔سورۂ الاسراء۔
٭ 4)سورۂ فاطر(35)۔۔سورۂ الملائکہ۔
٭5) سورۂ یسٰین(36)۔۔قلب القران۔
٭ 6)سورۂ المومن(40)۔۔۔سورۂ ٖ غافر۔
٭7)سورۂ حٰم السجدۂ (41)۔۔ سورۂ فُصِّلَت۔
٭8)سورۂ محمد(47) ۔۔سورۂ قتال۔
٭ 9)سورۂ المجادلہ(58)۔۔۔سورۂ ظہار۔
٭10)سورۂ الطلاق(65) ۔۔نساء صغرٰی۔
٭ 11)سورۂ ملک(67)۔۔سورہ تبارک ۔۔سورۂ  مانعہ ( باز رکھنے والی)،سورۂ واقیہ (حفاظت کرنے والی) ،سورۂ  منّاعہ(بہت زيادہ باز رکھنے والی اور روکنے والی)۔
٭12)سورۂ القلم(68)۔۔۔سورۂ ن۔
٭13)سورۂ دہر(76)۔۔۔سورۂ الانسان۔
٭14)سورہ النباء (78)۔۔ سورہ تساؤل اور سورۂ عَمَّ يَتَسَاۗءَلُوْنَ۔
٭15) سورہ الزلزال(99)۔۔سورہ زلزلہ۔ 
٭16)سورۂ الکافرون(109) ۔۔ربع قران۔
٭17)سورۃ لہب(111)۔۔۔سورہ المسد۔
٭18)سورۂ اخلاص(112)۔۔سورۂ صمد۔۔سورۂ نجات۔۔سورۂ اساس۔۔سورۂ معوذۂ۔۔سورۂ تفرید۔۔سورۂ تجرید۔۔۔سورۂ جمال۔۔سورۂ ایمان۔ثلث القران(تہائی قران)۔
۔۔۔
٭"زہراوہین"۔
سورہ بقرہ (2)اور سورۃ آل عمران (3) کوزہراوہین"کہا جاتا ہے۔ 
٭"معوذتین (معوذات)"۔
سورۂ الفلق(113)،سورۂ الناس(114) کو معوذتین کہا جاتا ہے۔ یہ دونوں سورۂ مبارکہ  ایک ساتھ  نازل ہوئیں۔
٭"مسبحات"۔
قرآن میں  سورہ الاسرا(17)ء ، سورہ حدید(57) ،  سورہ الحشر(59) ،  سورہ الصف (61)،  سورہ جمعہ(62) ،  سورہ التغابن(64) اور سورہ الاعلیٰ (87)کو مسبحات کہا جاتا ہے۔
٭"حوامیم"۔
جن سورتوں کا آغاز "حٰمٓ"سے ہوتا ہے۔۔یہ سات سورۃ مبارکہ ہیں۔
سورة غافر(40)،سورة فصلت(41)،سورة الشوریٰ(42)،سورة زخرف(43)،سورة الدخان(44)،سورة الجاثیہ (45)سورة   الاحقاف(46)۔
۔۔۔
٭"السّبع الطّوالَ"۔
 سورہ الفاتحہ کے بعد والی 7 لمبی سورتوں کو "سبع الطوال" کہتے ہیں۔۔جن میں سورہ البقرہ،سورہ آلِ عمران،سورہ النسا،سورہ  المائدہ،سورہ الانعام،سورہ الاعراف،سورہ الانفال۔
۔۔۔۔
٭"المثانی"۔
قرآن کریم کی وہ سورتیں جو سو سے کم آیات والی ہیں "المثانی"کہلاتی ہیں۔
۔۔۔
٭"  المئین"۔
قرآن کی وہ سورتیں جو سو سے زیادہ آیات والی ہیں"  المئین"کہلاتی ہیں۔
۔۔۔۔
٭ "المفصّل"۔
سورہ الحجرات(49) یا  سورہ ق (50) سے سورہ الناس(114) تک کا حصہ مفصل کہلاتا ہے۔
۔۔۔
٭"العتاق الاول"۔
یہ 5 سورتیں ہیں۔۔سورہ  بنی اسرائیل(17) ،سورہ  الکھف(18) ،سورہ المریم (19)،سورہ طہ (20)،سورہ الانبیاء(21)۔   

11 تبصرے:

  1. عہدِ صدیقی میں تدوینِ قران
    http://ilhaad.com/2016/07/tadween-e-quran-in-abubakar-period/

    جواب دیںحذف کریں
  2. عہدِ عثمانی میں ترتیب و تدوینِ قران
    http://ilhaad.com/2016/07/tadween-e-quran-in-uthman-period/

    جواب دیںحذف کریں
  3. جامع القرآن
    https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/1504/

    جواب دیںحذف کریں
  4. قرآن پاک رہتی دنیا تک ہر انسان کے لیے ہدایت اور رہنمائی ہے ۔اور یہ خدا کی قدرت اور نبی پاک ﷺ کی صداقت اور معجزے کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔حقیقی طور پر قرآن عظیم کو جمع فرمانے والااللہ تعالیٰ ہے۔چنانچہ ارشاد باری تعالیٰ ہے: اِنَّ عَلَیۡنَا جَمْعَہٗ وَ قُرْاٰنَہٗ ﴿ۚۖ۱۷﴾ (سورۃ قیامہ: ۱۷) ترجمہ:بیشک اس کا جمع کرنا اور اس کا پڑھنا ہمارے ذمہ ہے۔
    قران پاک جمع کرنے کے مراحل۔۔۔
    https://tareekhiwaqiat.com/tareekhiwaqait_15511.html

    جواب دیںحذف کریں

  5. جمع قرآن اور اس کی تدوین
    http://www.urdumajlis.net/threads/22980/

    جواب دیںحذف کریں
  6. http://www.darululoom-deoband.com/urdu/magazine/new/tmp/02_Tadwin_MDU_7_July_11.htm

    جواب دیںحذف کریں
  7. عہدرسالت میں جمع وتدوین قرآن
    http://ilhaad.com/2016/07/quran-tadween-door-e-nabvi/

    جواب دیںحذف کریں
  8. تدوینِ قرآن مجید ایک تحقیقی جائزہ
    http://www.darululoom-deoband.com/urdu/magazine/new/tmp/02_Tadwin_MDU_7_July_11.htm

    جواب دیںحذف کریں
  9. سورۂ فاتحہ کے نام
    http://www.islamicurdubooks.com/tafseer-ibn-kaseer/book.php?suratid=1&sbi=0

    جواب دیںحذف کریں

  10. سورۂ فاتحہ
    http://magazine.mohaddis.com/shumara/111-jan2000/1634-tafseer-teseer-rehman-quran

    جواب دیںحذف کریں

"بچپن سےپچپن تک"

"بچپن سے پچپن تک" پچیس جنوری ۔۔۔1967۔ پچیس جنوری۔۔۔2022۔ "جانا توبس یہ جانا کہ کچھ نہیں جانا" بچپن اور پچپن کے بیچ لفظی...