جمعہ, مارچ 29, 2013

" تھکن"

بظاہر سرسبز و شاداب
 نظر آنے والے پودے کی رگوں میں
سرسراتی نادیدہ دیمک
 قطرہ قطرہ
زندگی کا رس نچوڑتی جا رہی ہے -


5 تبصرے:

  1. بی بی ۔ سُبحان اللہ آپ تو الفاظ کا رس نچوڑ لیتی ہیں ۔ بلاگ کا مدعا ماشاء اللہ بہت خوبصورت لکھا ہے ۔ آپ نے میرے دل کی آواز چُرا لی ہے جو میں شاید الفاظ نہ ملنے کے باعث لکھ نہ سکا ۔ اللہ صحتمند ۔ خوش اور خوشحال رکھے

    جواب دیںحذف کریں
  2. بہت اعلیٰ۔۔۔ یہ بات اپنی اپنی سے محسوس ہوئی۔۔۔
    میں قطرہ قطرہ پگھل رہا ہوں۔۔۔ :)

    جواب دیںحذف کریں
  3. Waaah no pen can write it, only an observant eye and sensitive heart can pen it. .moving one

    جواب دیںحذف کریں

" ووٹ کس کو دیں "

پانچ سال ایک شاندارجمہوریت کے مزے لُوٹنے کے بعد بالاآخر وہ دن آ ہی گیا جب ہمارے سر پر سہرا سجنے والا ہے وہ کمی کمین جونام نہاد جمہوریت ک...