جمعہ, مارچ 29, 2013

" تھکن"

بظاہر سرسبز و شاداب
 نظر آنے والے پودے کی رگوں میں
سرسراتی نادیدہ دیمک
 قطرہ قطرہ
زندگی کا رس نچوڑتی جا رہی ہے -


5 تبصرے:

  1. بی بی ۔ سُبحان اللہ آپ تو الفاظ کا رس نچوڑ لیتی ہیں ۔ بلاگ کا مدعا ماشاء اللہ بہت خوبصورت لکھا ہے ۔ آپ نے میرے دل کی آواز چُرا لی ہے جو میں شاید الفاظ نہ ملنے کے باعث لکھ نہ سکا ۔ اللہ صحتمند ۔ خوش اور خوشحال رکھے

    جواب دیںحذف کریں
  2. بہت اعلیٰ۔۔۔ یہ بات اپنی اپنی سے محسوس ہوئی۔۔۔
    میں قطرہ قطرہ پگھل رہا ہوں۔۔۔ :)

    جواب دیںحذف کریں
  3. Waaah no pen can write it, only an observant eye and sensitive heart can pen it. .moving one

    جواب دیںحذف کریں

"معلوماتِ قران"

٭لفظ قرآن، قرآن مجید میں بطور معرفہ پچاس(50) بار اور بطور نکرہ اسی(80) بار آیا ہے ۔یعنی پچاس بار قرآن کا مطلب کلام مجید ہے اور اسی بار ویس...