جمعرات, اکتوبر 19, 2017

"اَفَلَا يَتَدَبَّرُوْنَ الْقُرْاٰنَ "

سورۂ النساء(4) آیت 176۔۔۔سورہ محمد(47) آیت 38۔
ترجمہ۔۔"پھر کیوں قرآن پر غور نہیں کرتے "۔
"معلوماتَِ القران"
٭لفظ قران 32 سورتوں کی 65 آیات میں  آیا ہے۔لفظ قرآن،قرآن  پاک میں بطور معرفہ پچاس(50) بار اور بطور نکرہ اسی(80) بار آیا ہے۔یعنی پچاس بار قرآن کا مطلب کلام مجید ہے۔اور اسی بار ویسے کسی پڑھی جانے والی چیز کے معنوں  میں استعمال ہوا ہے۔
٭ قران پاک ۔۔۔
٭ وَقُرْاٰنٍ مُّبِيْنٍ۔۔۔ سورۃ الحجر(15) آیت (1)۔۔سورہ یٰس(36) آیت(69)۔
٭وَالْقُرْاٰنَ الْعَظِيْـمَ۔۔۔سورۃ الحجر(15) آیت (87)۔
٭وَالْقُرْاٰنِ الْحَكِـيْـمِ۔۔۔سورہ یٰس(36) آیت(2)۔
٭وَالْقُرْاٰنِ الْمَجِيْدِ۔۔۔سورہ ق(50)آیت(1)۔۔سورہ البروج(85) آیت (21)۔
٭لَقُرْاٰنٌ كَرِيْـمٌ۔۔۔سورہ الواقعہ(56)آیت(77)۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں اللہ پاک نے اپنی صفت ربوبیت کا ذکر سب سے زیادہ مرتبہ فرمایا ہے۔قرآن کریم میں لفظ رب ایک ہزار چار سو اٹھانوے مرتبہ آیا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم لفظ الرحمٰن ستاون بار اور الرحیم ایک سو چودہ مرتبہ آیا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں لفظ اللہ دو ہزار چھے سو اٹھانوے  بار آیا ہے۔
۔۔۔
٭پورا کلمہ طیبہ  قرآن کریم میں کسی ایک جگہ بھی نہیں آیا۔
۔۔۔
٭ "أعوذ بالله من الشيطان الرجيم"  ۔قرآن کریم میں کسی ایک جگہ بھی نہیں آیا۔  ارشادِباری ہے۔
٭سورہ النحل(16)  آیت 98۔
فَاِذَا قَرَاْتَ الْقُرْاٰنَ فَاسْتَعِذْ بِاللّـٰهِ مِنَ الشَّيْطَانِ الرَّجِيْـمِ 
ترجمہ ۔“سو جب تم قرآن پڑھنے لگو تو شیطان مردود سے اللہ کی پناہ مانگ لیا کرو" ۔
٭ سورہ فٰصِلت(41) آیت36۔
وَاِمَّا يَنْزَغَنَّكَ مِنَ الشَّيْطَانِ نَزْغٌ فَاسْتَعِذْ بِاللّـٰهِ ۖ اِنَّهٝ هُوَ السَّمِيْعُ الْعَلِـيْمُ 
ترجمہ۔"اور اگر آپ کو شیطان سے کوئی وسوسہ آنے لگےتو اللہ کی پناہ مانگیے،بےشک وہی سب  کچھ سننے والا جاننے والا ہے"۔
۔۔۔
اَعُوْذُ بِاللّـٰهِ ۔۔۔سورہ البقرہ(2) آیت 67۔
مِنَ الشَّيْطَانِ الرَّجِـيْمِ۔۔۔ سورہ آلِ عمران(3) آیت 36۔
۔۔۔
٭قرآن پاک میں لفظ اﷲ اکبرنہیں ہے۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کو گیارہ  مقامات پر " يَآ اَيُّـهَا النَّبِىُّ " پکارا گیا ہے۔
۔۔۔
٭تین سورتوں  سورة الاحزاب(33) ،سور ة الطلاق(65) اور سورة التحریم (66)کی ابتدا " يَآ اَيُّـهَا النَّبِىُّ"سے ہوتی ہے۔
۔۔۔
٭سورہ النور(24) وہ واحد سورت ہے جس کی ابتدا لفظ "سورۃ" سے ہوتی ہے۔
۔'ترجمہ آیت(1)۔"یہ ایک سورت ہے جسے ہم نے نازل کیا ہے اور اس کے احکام ہم نے ہی فرض کیے ہیں اور ہم نے اس میں صاف صاف آیات نازل کی ہیں تاکہ تم سمجھو"۔
۔۔۔ 
٭قرآن پاک میں سب سے زیادہ الف استعمال ہوا ہے اور سب سے کم ظ استعمال ہوا ہے۔
۔۔۔
٭قرآن پاک میں  صحابہ کرام میں سے صرف ایک صحابی حضرت زید بن حارثہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا نام آیا ہے۔(سورۂ الاحزاب آیت 37 )۔
۔۔۔
٭قرآن میں کسی عورت کانام نہیں آیاہے فقط”حضرت مریم علیہا السلام“کا۔بی بی ”مریم “کانام قرآن میں 34مرتبہ آیاہے۔
۔۔۔
٭ سورۃ یوسف(12) کی  تیسری آیت میں حضرت یوسف علیہ السلام کےقصے کو "احسن القصص" کہا گیا ہے۔
نَحْنُ نَقُصُّ عَلَيْكَ اَحْسَنَ الْقَصَصِ 
 ترجمہ آیت 3۔۔ہم تمہارے پاس بہت اچھا قصہ بیان کرتے ہیں۔
۔۔۔
٭ قرآن پاک میں صرف دو بندوں کی کنیت ذکر ہے۔
ابن مریم ( سورہ النساء(4)،آیت 157)۔
ابی لہبسورۂ لہب(111)۔۔ ابولہب کا اصل نام عبدالعزیٰ تھا جو ایک کہ شرکیہ نام ہے عزیٰ اس بت کا نام تھا جسے قریش کے کفار پوجتےتھے اور عبدالعزیٰ کا معنی عزیٰ کا غلام۔۔اللہ پاک نے ابولہب کوشرکیہ نام سے پکارنے کی  بجائے  کنیت سے مخاطب کیا۔
۔۔۔
قرآن کریم کے مطابق سیدنا موسٰی علیہ السلام کو نو معجزے عطا فرمائے گئے۔۔۔۔
٭٭٭وَلَقَدْ اٰتَيْنَا مُوْسٰى تِسْعَ اٰيَاتٍ بَيِّنَاتٍ۔۔۔سورۂ بنی اسرائیل(17) آیت 101۔۔اور  ہم نے موسٰی کو نو کھلی نشانیاں 
دی تھیں۔
٭٭٭٭٭فِىْ تِسْعِ اٰيَاتٍ۔۔۔سورة النمل (27) آیت 12۔۔
۔۔۔
٭پانچ نبی جن کے نام اللہ رب العزت نے ان کی پیدائش سے قبل بتا دیے تھے۔
٭1)سیدنا عیسٰی علیہ السلام ۔۔۔سورة آل عمران(3) آیت (45)۔
٭2)سیدنا اسحاق علیہ السلام ،3) سیدنا یعقوب علیہ السلام۔سورة ھود (11)آیت (71)۔
٭4)سیدنا یحیٰی علیہ السلام۔۔۔سورة مریم(19) آیت (7)۔
٭5)سیدنا احمد صلی اللہ علیہ وسلم۔۔۔سورة الصف (61)آیت (6)۔
۔۔۔
٭قرآن میں لفظ ابلیس گیارہ مرتبہ آیا ہے۔
۔۔۔
٭ قرآن کریم میں  چھفرشتوں کے نام آئے ہیں۔
۔(1) جبریل(3 بار)۔۔سورۂ بقرۂ (2)آیت 97،آیت 98،سورۂ التحریم(66) آیت 4۔
۔(2) میکائیل۔ ۔۔سورۂ بقرۂ (2)آیت 98۔
۔(3) رعد۔۔سورۃ الرعد(13) آیت 13۔ 
۔(4) مالک۔۔سورۂ الزخرف(43) آیت 77۔
۔(5) ہاروت(6) ماروت۔۔سورۂ بقرہ (2) آیت 102۔
۔۔۔
٭قرآن پاک میں چند مومنین کے نام آئے ہیں۔
عمران۔۔سورہ آلِ عمران(3)۔آیت(33)۔
لقمان۔۔سورہ لقمان(31)،آیت(12)۔
،ذوالقرنین ۔۔سورہ الکہف(18)،آیت (83)۔
طالوت۔۔سورہ البقرہ(2)۔آیت(247)۔
۔۔۔

٭قرآن پاک میں چند قبیلوں اور قوموں کے نام آئے ہیں۔
ثمود۔۔سورۃ الاعراف(7)،آیت(73)۔سورہ الفرقان(25) آیت 38۔ 
عاد۔۔1)سورہ ہود(11)،آیت(5)۔ 2) سورہ الفجر(89)۔آیت(6)۔
یاجوج ماجوج ۔۔سورہ الکہف(18)۔آیت(94)۔
قومِ سبا۔۔سورہ سبا(34)۔آیت(15)۔
قومِ تبع۔۔سور ہ الدخان(44)۔آیت (37)۔
قبیلہ" قریش ۔۔سورۃ القریش(106)۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں دو مساجد کا نام آیا ہے۔
الْمَسْجِدِ الْحَرَام, الْمَسْجِدِ الْاَقْصَى(مسجد اقصٰی، مسجد الحرام ) سورہ الاسرا(15) آیت (1)۔
۔۔۔
٭ قران پاک میں دوممالک کا نام آیا ہے۔
مصر ۔سورہ یونس(10)۔آیت 87۔۔سورہ یوسف (12) آیت21۔
روم(سورہ الروم30)۔
۔۔۔
٭ قران پاک میں   دو وادیوں کا ذکر ہے۔
  ۔بِالْوَادِ الْمُقَدَّسِ طُوًى۔۔سورہ طہٰ(20)آیت 12۔۔ سورہ النازعات(79) آیت (16)۔
الْوَادِ الْاَيْمَنِ۔سورہ القصص(28)۔آیت30)۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں  چار شہروں کے نام  ہیں۔
۔1)مکہ۔۔
مکہ۔۔سورۃ فتح(48)آیت 24۔بکہ۔سورہ آلِ عمران(3)آیت 96۔۔البلد۔ سورہ البلد(90)۔
۔2)یثرب (مدینہ منورہ کا قدیم نام)۔۔سورہ الاحزاب (33) آیت13۔
۔3)بابل۔۔سورہ البقرہ(2) آیت 102۔
۔4)مدین ۔۔سورہ القصص (28) آیت 23۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں چار پہاڑوں کا نام آیا ہے۔
کوہ جودی۔۔سورہ ہود(11) آیت44۔
کوہِ صفا۔۔کوہِ مروہ۔سورہ البقرہ(2)آیت 158۔
 کوہِ طور(کوہ سینا،طورِسینا)سورہ البقرہ(2)آیت 93۔سورہ طور(52)۔سورۃ المومنون(23)آیت20۔سورہ  والتین(95) آیت2۔
۔۔۔
٭قرآن پاک میں دو دنوں کے نام آئے ہیں ۔
جمعہ۔ سورہ الجمعہ (62) آیت(9) ۔۔ہفتہ  السَّبْتِ۔(سورہ البقرہ(2) آیت65۔
۔۔۔
٭قران پاک میں  سات پھلوں کے نام ہیں۔۔۔  کھجور،انگور،انار، بیری،کیلا،انجیر،زیتون
کھجور (نَخْلٌ) ۔انگور(اَعْنَابٍ)۔۔سورۂ الانعام(6)آیت 99۔۔سورہ النحل(16) آیت 67۔سورۂ الکہف(18)۔آیت 32۔
انار (رُمَّانٌ)۔۔سورۂ  الرحمٰن55 آیت 68۔۔
بیری(سِدْرٍ)سورۂ واقعہ56۔آیت 28۔
کیلا(طَلْـحٍ)۔۔سورۂ الواقعہ56 ،آیت 29۔
انجیر(التِّيْنِ)،زیتون(الزَّيْتُوْنِ)سورۂ والتین95۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں چار سبزیوں کا ذکر ہے۔سورہ البقرۂ2،آیت61۔۔
بَقْلِهَا(ساگ) وَقِثَّـآئِهَا(لہسن) وَفُوْمِهَا(ککڑی) وَعَدَسِهَا(مسور) وَبَصَلِهَا(پیاز)۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں چار دھاتوں کا ذکر آیا ہے۔
لوہا (الْحَدِيْدَ)۔۔سورۂ الحدید57۔آیت 25۔
سونا(الذَّهَب)چاندی(الْفِضَّةِ) ۔۔سورہ آلِ عمران(3) آیت14۔
تانبا(مُهْلِ)سورۂ الکہف18۔آیت29۔
۔۔۔
٭قرآن کریم کی سات سورۂ مبارکہ حیوانوں کے نام پر ہیں۔
سورۂ البقرة(2) گائے۔۔
سورۂ الانعام(6)مویشی۔۔
سورۂ النحل(16)شہد کی مکھی۔۔
۔سورة النمل(27)چیونٹیاں۔۔
سورۂ العنکبوت(29)مکڑی۔۔
سورةۂ العادیات(100)گھوڑے۔۔
سورة الفیل(105)ہاتھی۔۔
۔۔۔
٭قرآن کریم میں چارپرندوں کا ذکر آیا ہے۔
٭1)وَالسَّلْوٰى(بٹیر)۔۔۔سورۂ البقرہ(2) ۔آیت(57)۔
٭2)غُـرَابً(کوا)۔۔۔سورۂ المائدہ(5)۔ آیت(31)۔
٭3) الْـهُـدْهُدَ (ہدہد)۔۔۔سورۂ النمل(۔ آیت (20) ۔
٭4)اَبَابِيْلَ(ابابیل)۔۔سورۂ الفیل (105)۔
۔۔۔
٭ قران کریم میں پانی والے اور رینگنے والے جانور۔۔
وَالضَّفَادِ( مینڈک) سورہ الاعراف(7) آیت133۔
لْحُوْتَۖ(مچھلی) سورہ الکہف (18)آیت 63۔
ثُـعْبَانٌ۔(اژدھا )۔سورہ الاعراف(7)،آیت 107۔ سورہ الشعرا(32) آیت 26۔
 ۔۔۔
٭ قران پاک میں  درج ذیل چوپایوں کا ذکر ہے۔
٭الْعِجْل(بچھڑا) سورہ البقرہ(2) آیت51۔
٭قِرَدَةً(بندر)سورہ البقرہ (2) آیت 65۔
٭بَقَرَةً،(گائے)سورہ البقرہ(2)۔آیت۔67۔
٭حِمَار(گدھا)سورہ البقرہ(2)۔آیت259۔
٭الْخِنزِيْـرِ(  سؤر)سورہ البقرہ(2)۔آیت۔173۔
٭الْمَعْزِ(بکری)سورہ الانعام(6)۔آیت 143۔
٭الْغَنَـمِ(بکریاں)۔سورہ الانعام(6)۔آیت ۔146۔سورہ الانبیا(21) آیت 78۔
٭الضَّاْن(بھیڑ) سورہ  الانعام(6)۔آیت143۔
٭(اونٹ)۔۔۔
۔٭الْاِبِلِ۔سورہ  الانعام(6)۔آیت144۔الْجَمَلُ ۔۔ سورہ الاعراف(7)  آیت40۔
٭٭الْكَلْبِۚ(کتا)۔سورہ الاعراف(7) آیت 176۔۔سورہ الکہف(18)۔آیت (18)۔
٭الـذِّئْبُا(بھیڑیا)۔سورہ یوسف(12)،آیت13۔۔
٭٭٭٭٭٭٭وَالْخَيْلَ(گھوڑے) وَالْبِغَالَ(خچر) وَالْحَـمِيْـرَ(گدھے)۔۔سورہ النمل(16) آیت(8)۔
٭نَعْجَة(دُنبی (بھیڑ) سورہ ص (38) آیت 23۔
٭٭٭٭قَسْوَرَةٍ (شیر)۔سورہ المدثر(74) آیت 51۔
٭الْفِيْلِ(ہاتھی)سورہ فیل((105)۔
۔۔۔
٭ قران پاک میں  آٹھ حشرات الارض کے نام  ہیں  ۔۔
 بَعُوْضَةً(مچھر )۔۔سورہ البقرہ(2)۔۔آیت26۔
وَالْجَرَادَ وَالْقُمَّلَ (ٹڈی ،جوئیں )۔سورہ الاعراف(7) آیت133۔۔۔سورہ القمر(54) آیت 7۔
 النَّحْلِ(شہد کی مکھی)۔۔سورہ النحل(16)۔آیت68۔
الـذُّبَابُ (مکھی) سورہ الحج(22) آیت 73۔
النَّمْلُ(چیونٹی)۔۔سورہ النمل(27)۔ آیت18۔
الْعَنْكَـبُوْتِۚ(مکڑی)۔۔سورہ العنکبوت(29)۔ آیت41۔
الْفَرَاشِ(پروانہ پتنگہ ،تتلی)۔سورہ القارعہ(101) آیت 4۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

5 تبصرے:

  1. السلام علیکم و رحمۃ اللہ
    اُمید ہے کہ آپ مع اہل و عیال بخیر و عافیت ہوں گی
    اچھی معلومات فراہم کی ہیں ۔ جزاک اللہ خیراً
    اللہ سب مُسلمانوں کو قرآن شریف کو سمجھنے اور اس کے مطابق عمل کرنے کی وفیق دے

    جواب دیںحذف کریں
  2. وعلیکم السلام
    آمین
    اللہ کا شکر ہے۔ سب خیریت ہے۔
    اللہ تعالیٰ ہم سب کو علمِ نافع پڑھنے، سمجھنے اور عمل کرنے کی توفق عطا فرمائے آمین۔

    جواب دیںحذف کریں

  3. قرآن مجید کو جمع کرنے والا سب سے پہلے اللہ تعالی خود ہے۔ جیسا کہ قرآن مجید میں ارشاد فرمایا :

    إِنَّ عَلَيْنَا جَمْعَهُ وَقُرْآنَهُ

    القيامة 17

    بے شک اسے (آپ کے سینہ میں) جمع کرنا اور اسے (آپ کی زبان سے) پڑھانا ہمارا ذِمّہ ہےo

    فَإِذَا قَرَأْنَاهُ فَاتَّبِعْ قُرْآنَهُ

    القيامة 18

    پھر جب ہم اسے (زبانِ جبریل سے) پڑھ چکیں تو آپ اس پڑھے ہوئے کی پیروی کیا کریںo

    حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم دوسرے جامع القرآن ہیں، آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے مختلف اشیاء پر قرآن مجید کو لکھوا کر جمع کیا۔ سارا قرآن مختلف اشیاء میں لکھا ہوا تھا۔

    تیسرے جامع القرآن حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ ہیں۔ جنگ یمامہ میں جب کثیر تعداد میں حفاظ وقراء صحابہ کرام شہید ہوئے تو حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ نے حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے مشورے سے قرآن مجید کو مختلف اشیاء سے کتابی شکل میں جمع کیا۔ تو اس طرح سب سے پہلے حضور علیہ الصلاۃ والسلام کے بعد حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ عنہ نے قرآن مجید کو کتابی شکل میں مدون کروایا۔

    حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ چوتھے جامع القرآن ہیں، آپ کے زمانہ خلافت میں جب فتوحات بہت زیادہ ہو گئی اور مختلف زبانیں بولنے والے جب دائرہ اسلام میں داخل ہوئے تو انہون نے قرآن مجید کی مختلف قراءتوں شروع کر دیں۔ تو اس وقت امت مسلمہ سے اختلاف کو ختم کرنے کے لئے اور ایک قرات پر جمع کرنے کے لئے آپ رضی اللہ عنہ نے قرآن مجید کو ایک قرات پر جمع کیا۔

    قرآن مجید کے ساتھ جو تفسیر لکھی گئی تھی، اس تفسیر کو بھی ختم کروایا۔ لہذا آپ رضی اللہ عنہ نے اصل قرآن مجید کو تفسیروں سے الگ کر کے جمع کیا، اس وجہ سے آپ رضی اللہ عنہ کو جامع القرآن کہا جاتا ہے۔
    https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/1504/

    جواب دیںحذف کریں
  4. کتابت قرآن،جمع قرآن اور نشر قرآن تینوں میں حضرت زید رضی اللہ عنہ کا اہم کردار رہاہے۔
    جب حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے مدینہ کی طرف ہجرت فرمائی تو اس وقت حضرت زید رضی اللہ عنہ کی عمر گیارہ سال تھی۔ اس حساب سے آپ کا سن ولادت تقریبا 2نبوی بنتاہے۔45ھ میں علم وفقہ کا یہ عظیم چراغ کئی سالوں تک دنیا کو علم کی روشنی سے منور کرنے کے بعد قبر کی زینت بن گیا۔
    http://library.ahnafmedia.com/134-faqeeh/2013/jan/296-hazrat-zahid-bn-sabt-razi-allah-hano

    جواب دیںحذف کریں
  5. سورہ الفاتحہ
    http://library.ahnafmedia.com/205-books/duroos-ul-quran-01/1812-suratul-fatiha

    جواب دیںحذف کریں

" ووٹ کس کو دیں "

پانچ سال ایک شاندارجمہوریت کے مزے لُوٹنے کے بعد بالاآخر وہ دن آ ہی گیا جب ہمارے سر پر سہرا سجنے والا ہے وہ کمی کمین جونام نہاد جمہوریت ک...